یہ ذرا ذرا سی بات پر ، طرح طرح کے عذاب کیوں
،جو کسی سے بھی خفا نہ ھو، مجھے اس راہبر کی تلاش ھے

مجھے لغزشوں پہ ھر اک گھڑی، کوئی ٹوکتا ھے بار بار
،جسے کر کے دل کو دکھ نہ ھو، مجھے اس گناه کی تلاش ھے

میں ڈھونڈتا ھوں وه خزاں، جسے گلشنوں سے پیار ھو
،جسے کسی چراغ سے نہ بیر ھو، مجھے اس ھوا کی تلاش ھے

ان حسن کدوں سے شور سے، میری سماعتیں ہیں اجنبی
،ھو جس پکار میں مخلصی، مجھے اس صدا کی تلاش ھے

بنا ہمسفر کے کب تلک کوئی مسافتوں میں لگا رھے
،جہاں کوئی کسی سے جدا نہ ھو، مجھے اس راه کی تلاش ھے

مجھے دیکھ کر جو اک نظر، میرے سارے درد سمجھ سکے
!!!...جو اس قدر ھو چاره گر، مجھے اس نگاه کی تلاش ھے

========================================================================
Bonas Poetry: Two Lines Poetry


Mujhe Kisi Se Muhabbat Nahi Tere Siwa
Mujhe Kisi Ki Zarurat Nahi Tere Siwa,

Jo Mere Dil Or Meri Zindagi Pe Raaj Kare
Kisi Ko Itni Ijazt Nahi Tere Siwa...!!!
---------------------------------------------------------------------
Ek Woh Waqat Ky Terey Hotey Huye Dunya Thi Apni
Ek Yeh Waqat Ky Sari Dunya Me Tanha Hain Hum...!!!
---------------------------------------------------------------------
Ek Umar Hai Jo Bitani Hai Tere Baghair,
Ek Lamha Hai Jo Bin Tere Guzara Nhi Jata...!!!
---------------------------------------------------------------------
Nazar Sy Door Rah Kar Bhi Kisy Ky DIL Me Rehna,
Kisi Ky Pass Rehny Ka Tareeqa Ho Tum Jaisa...!!!
---------------------------------------------------------------------

Share to:

 
Top